ہمیں تیری قدرت پہ ایقان ہے تو بندوں پہ یارب مہربان ہے

ہمیں تیری قدرت پہ ایقان ہے تو بندوں پہ یارب مہربان ہے

محمدہارون سیٹھ


ہمیں تیری قدرت پہ ایقان ہے
تو بندوں پہ یارب مہربان ہے


امڈ کر نہ آئے مری آنکھ سے
مرے دل میں غم کا جو طوفان ہے


پریشانیوں کو مری دور کر
یہ ناچیز بے حد پریشان ہے


تجھے رات دن یاد کرتا ہوں میں
مگر پھر بھی تو ہے کہ انجان ہے


خدا وند دے رستگاری مجھے
مری زندگی ایک زندان ہے


خطائوں کو بندے کی کردے معاف
یہ اولاد آدمؑ ہے انسان ہے

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے