قلم کو حمد کی طاقت عطا میرے خدا کردے جنوں کو ہمت پرواز و فکرِ نو عطا کردے

قلم کو حمد کی طاقت عطا میرے خدا کردے جنوں کو ہمت پرواز و فکرِ نو عطا کردے

جنوںؔ بنارسی


قلم کو حمد کی طاقت عطا میرے خدا کردے
جنوں کو ہمت پرواز و فکرِ نو عطا کردے


حقیقت میں حقیقت کو رقم اے دوست کرتا ہوں
بہ پیش ذاتِ حق اپنا قلم اے دوست کرتا ہوں


مرے مضمون کو یارب صدائے لامکاں کردے
میں تیرا ذکر لکھتا ہوں تو مقبول جہاں کردے


خیال و فکر کو میرے جہاں میں آشنا کردے
مرے ہر لفظ کو وقف حقیقت اے خدا کردے


دلوں کی بات کو منظوم کرنا بھی تو مشکل ہے
تصور میں حقیقی رنگ بھرنا بھی تو مشکل ہے

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے