یاالٰہی مری دعا سن لے یہ گزارش یہ التجا سن لے

یاالٰہی مری دعا سن لے یہ گزارش یہ التجا سن لے

الطافؔ احسانی


یاالٰہی مری دعا سن لے
یہ گزارش یہ التجا سن لے
تجھ ہی سے التجا ہے یااللہ
ہم ہیں محتاج اور تو داتا
تیرے آگے نہیں یہ بات بڑی
کردے آسان مشکلیں ہیں کڑی
اپنے محبوبؐ کے تصدق سے
پوری ہر آرزوئے دل کردے
جن کا گھر بے چراغ رہتا ہے
جن کو اولاد کی تمنا ہے
کردے آباد ان کا گھر یارب
روشنی ان کو بخش کر یارب
مال و اسباب پر جو ہیں نازاں
کر عطا ان کو دولتِ ایماں
دل میں حرص و ہوس کا ہو نہ گزر
زندگی تیری راہ میں ہو بسر
پاس الطافؔ کے نہ آئے غم
دین کی راہ پر چلے ہر دم

Post a comment

0 Comments